Phirta Liye Chaman Main Hai Deewanapan Mujhe | Ibrahim Zauq

پھرتا لےا چمن مںھ ہے دیوانہ پن مجھے
زنجرِ پا ہے موجِ نسمِا چمن مجھے

ہوں شمع یا کہ شعلہ خبر کچھ نہںا مگر
فانوس ہو رہا ہے مراا پرھاہن مجھے

کوچے مں ترمی کون تھا لتا بھلا خبر
شب چاندنی نے آ کے پہنایا کفن مجھے

دکھلاتا اک ادا مںا ہے سو سو بناؤ
کس سادہ پن کے ساتھ تر ا بانکپن مجھے

آیا ہوں نور لے کے مںی بزمِ سخن مں ذوق
آنکھوں پہ سب بٹھائںے گے اہلِ سخن مجھے

شاعر ابراہیم ذوق

Leave a Reply

Your email address will not be published.